October 4, 2023

NEEWS BEEM

INFO ZONE WITH ZEE

امریکہ اور آئی ایم ایف کی غلامی منظور نہیں، سراج الحق

1 min read


ویب ڈیسک: ملک بھر میں مہنگائی اور بھاری بجلی بلوں کیخلاف امیر جماعت اسلامی پاکستان نے پشاور میں دھرنا شروع کر دیا ہے۔ دھرنے کے آج دوسرے دن امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ نگران وزیر اعظم ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے لئے امریکی حکومت سے مطالبہ کریں، اگر وزیر اعظم ڈاکٹر عافیہ کو واپس لاتے ہیں تو میں انکا استقبال کرونگا۔
سراج الحق نے دھرنا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ ایک عرصے سے خیبر پختونخوا کے غیرت مند لوگ متاثر ہورہے ہیں، صوبے میں بد امنی اور مہنگائی کا راج ہے، صوبے میں ہر طرف کرپشن،بد انتظامی اور نااہلی ہے جس سے عوام کو پریشانی کا سامنا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ صوبہ خِیبرپختونخوا کو قرض فری صوبہ بنایا تھا لیکن آج صوبہ قرضوں کے دلدل میں گھرا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس صوبے کو اللہ نے کئی نعمتوں سے نوازا ہے، بجلی،معدنیات اور سیاحت کی وجہ سے سویٹز لینڈ سے کم نہیں، ان نعمتوں کے باوجود صوبہ محرومیوں کا شکار ہے۔
سراج الحق نے کہا کہ ہمارا ایک ہی مطالبہ ہے کہ عوام کو جینے دو، امریکہ،آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کے غلامی عوام کو منظور نہیں، ہم آزاد اور عزت کے ساتھ جینا چاہتے ہیں۔ انہوں نے دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے سیاستدانوں کے اربوں ڈالر باہر پڑے ہوئے ہیں، کیا ہمیں ان لوگوں سے پوچھنے کا حق نہیں.
انہوں نے کہا کہ دشمن کے ایٹم بم سے خطرہ نہیں کرپٹ قیادت سے ہے جو کسی صورت کسی ایٹم بم سے کم نہیں۔ ہمارے ملک کے کماو ادارے پی آئی اے، سٹیل ملز اور ریلوے خسارے میں ہیں، قطعی طور پر امریکہ، ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کی غلام قیادت کو سو بار بھی موقعہ ملے آپ کے دن نہیں بدلیں گے۔
ان کا گورنر ہاوس کے سامنے دھرنا میں کہنا تھا کہ بیرون ملکوں میں نہ تو جج نہ جنرلز اور نہ حکمرانوں کے بنگلے ہوتے ہیں، پاکستان کے لوگ ریٹائرڈ ہو جائیں تو باہر ممالک میں جزیرے خریدتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر موقعہ ملا تو ان چوروں سے آپکا حق لونگا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *